گراونڈ میں آتے ہوئے نسیم شاہ اور محمد موسیٰ سے کیا کہہ کر آئے تھے؟ یاسر شاہ نے سینچری کے پیچھے چھپی اندر کی بات بتا دی

26

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لائیک کریں شکریہ
آسٹریلیا کیخلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں آٹھویں نمبر پر آ کر سینچری بنانے والے یاسر شاہ نے راز سے پردہ ہٹاتے ہوئے کہاہے کہ کوشش یہی تھی کہ وکٹ پر زیادہ وقت گزاروں جس میں کامیاب رہا ،


کوشش یہی تھی کہ وکٹ پر زیادہ وقت گزاروں جس میں کامیاب رہا ، آسٹریلیا کے باولرز بہت مشکل ہیں ان کے خلاف اننگ کھیلنا مشکل رہا۔ یاسر شاہ نے جب بلا تھامے ہوئے میدان میں قدم رکھا تو پاکستان کی چھ وکٹیں گر چکی تھیں اور بابراعظم وکٹ پر موجود تھے تاہم دونوں کے درمیان بھی اچھی شراکت قائم ہوئی ۔ یاسر شاہ نے 213 گیندوں پر 13 چوکوں کی مدد سے 113 رنز کی اننگ کھیلی۔ یاسر شاہ کا کہنا تھا کہ بابر اعظم دوسری طرف پر بیٹنگ کر رہے تھے، ان کا ساتھ ہونے کی وجہ سے مجھے بھی بیٹنگ بھی آسان لگنا شروع ہوگئی تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ وکٹ پر رکنے سے ہی زیادہ رنز بنتے ہیں جب میں تیسرے روز کھیل سے قبل نیٹ پر بیٹنگ کررہا تھا تو یہ خیال ذہن میں تھا کہ سارا دن بیٹنگ کروں، گراونڈ آتے ہو ئے نسیم شاہ اور محمد موسٰی سے بھی یہی بات کر رہا تھا کہ سارا دن بیٹنگ کرنا ہے جس میں کامیاب رہا اور سنچری بھی ہوئی۔